ملتان میں ”لڑکے“ کی ” لڑکے“ سے شادی

0
252

ملتان (اے ون نیوز) آر پی او ملتان کی طرف سے تشکیل دی جانے والی ایس پی گلگشت شاہد نیاز، ڈی ایس پی جاوید طاہرمجید اور چار ایس ایچ اوز پر مشتمل 40 رکنی چھاپہ مار ٹیم نے تھانہ الپہ کے علاقے میں ایک کاسمیٹک بنانے والی فیکٹری کے فارم ہاﺅس پر چھاپہ مار کر ایک لڑکے کی لڑکے سے ”شادی“ کی تقریب میں شریک غیر فطری فعل کے عادی درجنوں افراد کو گرفتار کرلیا گیا۔

روزنامہ خبریں کے مطابق گرفتار ہونے والوں میں بعض خواجہ سرا، بعض عیاش مرد، اشتہاری، منشیات فروش اور شہر کے بدنام اوباش حضرات سمیت کئی سرکاری اہلکار بھی شامل تھے جبکہ خوبرو لڑکے مجاہد کو پولیس نے دلہن کے روپ میں سٹیج پر بیٹھے ہوئے گرفتار کیا جبکہ اس کا ”خاوند“ عامر علی ڈھلوں جو کہ ریڈ سے چند لمحے قبل بہاولپور سے آنے والے مہمانوں کو خوش آمدید کہنے کیلئے فارم ہاﺅس کی طرف آنے والے راستے پر کھڑا تھا پولیس کو دیکھ کر فرار ہوگیا۔ گرفتاری کے وقت دلہن کا روپ دھارے مجاہد نے بتایا کہ ہماری ”شادی“ ایک دن پہلے ہوئی ہے آج تو ہمارا ”ولیمہ“ تھا جس کی جے ٹی ٹی اہلکار فخر نے عامر اور ہم سے بھاری رقم لے کر اجازت دی تھی اور یقین دہانی کرائی تھی کہ وہ خود بھی موقع پر موجود رہ کر ہر قسم کا تحفظ فراہم کرے گا۔

”دلہن“ مجاہد کی یہ بات اس وقت درست ثابت ہوئی جب پولیس نے اسی اجتماع سے پولیس کا وائرلیس سیٹ ہاتھ میں پکڑے کونے میں بیٹھے اہلکار فخر جو کہ سول ڈریس میں تھا کو بھی گرفتار کرلیا۔ ”ولیمہ“ کی اس تقریب میں شرکت کیلئے نہ صرف ملتان بلکہ دیگر اضلاع سے بھی درجنوں کی تعداد میں قیمتی گاڑیوں پر سوار افرا دپہنچے تھے اور بدکاری کے اس لوطی دھندے میں ملوث سینکڑوں نوجوانوں میں شہر کی کئی معزز شخصیات بھی تھیں جنہیں دیکھ کر پولیس بھی حیران رہ گئی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here