نوجوان نے ٹک ٹاک ویڈیو بناتے ہوئے دوست کی جان لے لی

0
192

نئی دہلی (اے ون نیوز) 19 سالہ لڑکا ٹک ٹاک ویڈیو بناتے ہوئے قتل ہو گیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ سلمان نامی لڑکا اپنے دو دوستوں سہیل اور عامر کے ہمراہ انڈیا گیٹ گیا۔انڈیا گییٹ سے واپس آتے ہوئے سلمان گاڑی چلا رہا تھا جب اس کےد وست سہیل نے ٹک ٹاک ویڈیو بنانے کی غرض سے پستول سلمان کے سر پر رکھا جس کے بعد لڑکے کے ہاتھوں سے پستول چل گیا اور سلمان کی ایک دم چیخ نکلی۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ عامر اور سہیل واقعے کے بعد ڈر گئے اور گاڑی کو رشتہ داروں کے گھر لے گئے۔جہاں سہیل نے اپنے خون کے دھبوں سے بھرے کپڑے تبدیل کیے۔جب کہ رشتہ داروں کی مدد سے وہ سلمان کو ایک اسپتال لے کر گئے جہاں پر ڈاکٹرز نے اس کی موت کی تصدیق کی۔جب کہ سہیل ملک کو قتل کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔

تاہم اس کا موقف ہے کہ میرا اپنے دوست کو قتل کرنے کا کوئی ارادہ نہیں تھا بلکہ وہ ٹک ٹاک ایپ پر ویڈیو بنا رہا تھا کہ اچانک گولی چل گئی۔

سہیل اور عامر نامی ملزمان کو قتل کے ثبوت مٹانے کی وجہ سے پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔واضح رہے بھارت میں ٹک ٹاک پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ بھارت کی مدراس ہائیکورٹ نے ٹک ٹاک ایپ پر پابندی عائد کرنے کا حکم دیا تھا۔ بھارتی عدالت نے کہا ہے کہ ویڈیو شئیرنگ ایپ فحاشی پھیلانے کا سبب بن رہی ہے۔انڈو نیشیا اور بنگلہ دیش میں ٹکٹ ٹاک پر پہلے ہی پابندی عائد ہے ۔ بھارت میں بھی اس ایپ پر پابندی عائد کی جائے۔بھارتی حکومت کو اس سلسلہ میں اقدامات کرنے چاہئیے۔عدالت نے یہ بھی کہا کہ اس موبائل ایپ کی وجہ سے فحاشی عام ہو رہی ہے اور بالخصوص بالغ بچے غیر اخلاقی سرگرمیوں کا شکار ہو رہے ہیں۔اس ایپ سے ملکی سلامتی کو بھی خطرہ لاحق ہو سکتا ہے

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here