آسٹریلیا میں خشک سالی کا راج

پرتھ(اے ون نیوز)آسٹریلیا کی ریاست نیو ساؤتھ ویلز کو سرکاری سطح پر قحط زدہ قرار دے دیا گیا ہے۔بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق آسٹریلیا کی غذائی ضروریات پوری کرنے والی ریاست نیو ساؤتھ ویلز کو آسٹریلیا کی سب سے بدترین خشک سالی کا سامنا ہے۔ ساؤتھ ویلز آسٹریلیا کی سب سے گنجان آباد ریاست ہے جو ملک کی زراعت میں سب سے زیادہ حصہ ڈالتی ہے۔

حکومت کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ رواں برس انتہائی خشک موسم کے باعث اس ریاست پر بہت زیادہ منفی اثر پڑا ہے اور اس وجہ سے پوری ریاست کو ہی سرکاری طور پر قحط زدہ قرار دیتے ہوئے 576 ملین آسٹریلین ڈالر کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

بیورو آف میٹرلوجی کا کہنا ہے کہ جنوبی آسٹریلیا میں موسم خزاں سے جاری بدترین خشک سالی نے ہولناک شکل اختیار کر لی ہے مون سون میں بھی صرف 10 ملی میٹر بارش ہوئی ہے جس سے فصلوں کو درکار پانی نہیں مل سکا ہے اور اجناس کی کمی کے باعث جانور ہلاک ہو رہے ہیں۔

محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ موسمی تغیرات کی وجہ سے غیر یقینی صورت حال کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ ماحولیاتی تبدیلیوں کے منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ اس لیے اب ہم سب کی امیدوں کا محور بارش ہے۔ صرف بارش ہی اس گھمبیر صورت حال کو تبدیل کر سکتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں