وزیراعظم آزاد کشمیر اور محمود اچکزئی کو نوازشریف سے ملاقات کی اجازت نہ ملی

اسلام آباد(اے ون نیوز)وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور پشتونخوا میپ کے سربراہ محمود اچکزئی کو اڈیالہ جیل میں نوازشریف سے ملاقات کرنے کی اجازت نہیں دی گئی۔

اڈیالہ جیل میں آج قیدیوں سے ملاقات کا دن ہے اور میاں نوازشریف، مریم نواز، کیپٹن (ر) صفدر سے ملاقات کے لیے پارٹی رہنما اڈیالہ جیل پہنچ رہے ہیں۔پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود اچکزئی بھی نوازشریف سے ملاقات کے لیے اڈیالہ جیل پہنچے تاہم انہیں ملاقات کی اجازت نہیں دی گئی جب کہ وزیراعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق حیدر اور سینیٹر عثمان کاکڑ کو بھی ملنے کی اجازت نہیں ملی۔

اڈیالہ جیل کے باہر میڈیا سے گفتگومیں محمود اچکزئی نے کہاکہ دو ہفتے سے اسلام آباد میں ہوں، ہر بار مجھے منع کردیتے ہیں، یہ کیا طریقہ ہے، وہ تین بار کے وزیراعظم ہیں۔
دوسری جانب میاں نوازشریف سے ملاقات کے لیے شہبازشریف بھی بذریعہ موٹروے لاہور سے اسلام آباد روانہ ہوگئے ہیں، اس کے علاوہ مریم اورنگزیب، سعود مجید، برجیس طاہر اور سعد رفیق بھی سابق وزیراعظم سے ملاقات کے لیے اڈیالہ جیل پہنچ رہے ہیں۔

اس کے علاوہ عابد شیر علی، طارق فضل چوہدری، غلام بلور، محمد زبیر امیر، امیر مقام، رانا تنویر، بلیغ الرحمان، عطا الحق قاسمی اور طارق فاطی بھی اہلیہ کے ہمراہ اڈیالہ جیل پہنچ گئے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہےکہ نوازشریف سے ملاقات میں شہبازشریف سیاسی منظرنامے سے متعلق ان سے ہدایت لیں گے۔

واضح رہےکہ ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا سنائے جانے کے بعد نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر اڈیالہ جیل میں قید ہیں جب کہ لیگی رہنما صفدر عباسی بھی ایفی ڈرین کیس میں سزا پانے کے بعد اڈیالہ جیل میں ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں